خَراجٌ

اردو خراج، ٹیکس
Indonesia Pajak bumi

مالٌ مَعْلومٌ تَفْرِضُهُ الدَّوْلَةُ على الأَرْضِ التي أَخَذَها المُسْلِمُونَ مِن الكُفَّارِ إمّا صُلْحاً أو قَهْراً.

اردو مال کی ایک معلوم مقدار جسے حکومت اس زمین پر لاگو کرتی ہے جسے مسلمانوں نے کافروں سے از طریق صلح یا پھر بذریعہ غلبہ حاصل کیا ہو۔
Indonesia Harta tertentu yang diwajibkan negara terhadap tanah yang diambil kaum muslimin dari orang kafir, baik dengan cara damai atau penaklukan.

الخَراجُ في الشَّرِيعَةِ الإِسْلامِيَّةِ نَوْعٌ مِن الضَّرِيبَةِ على الأَرْضِ، وهي مِقْدارٌ مُعَيَّنٌ مِن المالِ يُحَدِّدُهُ الإِمامُ مِن خِلالِ أَهْلِ الخِبْرَةِ، وتَفْرِضُهُ الدَّوْلَةِ سَنَوِيّاً على الأَرْضِ التي أَخَذَها المُسْلِمونَ مِن الكُفَّارِ، سَواءً أَخَذُوها عن طَرِيقِ الصُّلْحِ مع الكُّفَّارِ، أو عن طَريقِ القَهِرِ والقُوَّةِ، وتُسَمَّى بِالأَرْضِ الخَراجِيَّةِ. ويَنْقَسِمُ الخَراجُ بِاعْتِبارِ المَأْخوذِ مِن الأَرْضِ إلى قِسْمَيْنِ: 1- خَراجُ الوَظِيفَةِ، وهو: أن يكون الواجِبُ شَيْئاً في الذِّمَّةِ، سَواءً زَرَعها صاحِبُها أم لا. 2- خَراجُ المُقَاسَمَةِ، وهو: أن يكون الواجِبُ جُزْءًا شائِعاً مِن الخارِجِ مِن الأَرْضِ كالرُّبُعِ والخُمُسِ. ويَنْقَسِمُ أيضاً بِاعْتِبارِ نَوْعِ الأَرْضِ إلى: 1- الخَراجُ الصُّلْحِيّ: وهو الخَراجُ الذي يُفْرَضُ على الأَرْضِ التي صُولِحَ عليها أَهْلُها، على أن تكون الأَرْضُ لَهُم، ويُقَرُّونَ عليها بِخَراجٍ مَعْلومٍ. 2- الخَراجُ العَنْوِيُّ: وهو الخَراجُ الذي يُوضَعُ على الأَرْضِ التي افْتُتِحَت عَنْوَةً، أيْ: بِالقَهْرِ والقُوَّةِ بعد أن وَقَفَها الإِمامُ على جَمِيعِ المُسْلِمِينَ.

اردو اسلامی شریعت میں خَرَاج زمین پر عائد ہونے والا ایک قسم کا ٹکیس ہے ۔ یہ مال کی ایک معین مقدار کا نام ہے جسے حاکم وقت تجربہ کار لوگوں کے مشورہ سے مقرر کرتا ہے اور حکومت اسے سالانہ ایسی زمین پر لاگو کرتی ہے جسے مسلمانوں نے کافروں سے صلح یا غلبہ کے ذریعہ حاصل کیا ہو۔ اس زمین کو خراج والی زمین کہا جاتا ہے۔ زمین سے حاصل شدہ اشیاء کے اعتبار سے خراج کی دو اقسام ہیں: 1- خراج وظيفة: وہ یہ ہے کہ کوئی شے خراج دہندہ کے ذمہ واجب ہو چاہے وہ اس کی کاشت کرے یا نہ کرے ۔ 2- خراج مُقاسَمہ :وہ یہ ہے کہ زمین کی پیدوار کا ایک عام حصہ جیسے ربع یا خمس دینا واجب ہو۔ زمین کی نوعیت کے اعتبار سے بھی خراج کی درج ذیل اقسام ہیں: 1) الخَراجُ الصُّلْحِيّ: وہ خراج جو اس زمین پرلاگو کیا جاتا ہے جس کے باسیوں سے اس شرط پرصلح کی جاتی ہے کہ زمین ان کے پاس رہے گی اورانہیں خراج کی ایک معین مقدارادا کرنی ہوگی۔ 2) الخَراجُ العَنْوِيُّ: وہ خراج جو ایسی زمین پر لاگو ہوتا ہے جو بذریعہ طاقت وغلبہ حاصل کی گئی ہو یہ خراج اس وقت لاگو ہوگا جب حاکم وقت مذکورہ زمین کو مسلمانوں پر وقف کردے۔
Indonesia Al-Kharāj dalam syariat Islam merupakan salah satu bentuk pajak bumi. Yaitu sejumlah harta tertentu yang ditetapkan pemimpin berdasarkan masukan dari para pakar, dan negara mewajibkannya setiap tahun atas tanah yang diambil kaum muslimin dari orang-orang kafir, baik mereka mengambilnya melalui perdamaian dengan orang-orang kafir atau dengan jalan paksaan dan kekuatan. Dan tanah tersebut dinamakan al-arḍu al-kharājiyyah. Berdasarkan yang diambil dari tanah, al-kharāj terbagi menjadi dua: 1. Kharāj al-Waẓīfah (pemakaian), yaitu jumlah yang wajib disetorkan merupakan sesuatu yang dalam tanggungan baik pemiliknya menanami tanah atau tidak. 2. Kharāj al-Muqāsamah (pembagian), yaitu jumlah yang wajib disetorkan merupakan bagian menyeluruh dari hasil yang keluar dari tanah, seperti seperempat dan seperlima. Dan berdasarkan jenis tanah, al-kharāj juga dibagi menjadi: 1. Al-Kharāj aṣ-Ṣulḥi, yakni pajak yang diwajibkan pada tanah yang pemiliknya menjalin perdamaian dengan kesepakatan tanah tetap milik mereka, namun mereka harus menyerahkan sebagian hasilnya dalam jumlah tertentu. 2. Al-Kharāj al-‘Anwiy, ialah pajak yang ditetapkan pada tanah yang dikuasai dengan kekuatan, yakni dengan paksaan dan kekuatan senjata, setelah imam mewakafkannya untuk seluruh muslimin.

الخَراجُ: الشَّيْءُ الخارِجُ مِن الأَرْضِ. وأَصْلُه مِن الخُروجِ، وهو: النَّفاذُ والظُّهورُ والبُروزُ، ويُطْلَقُ بِمعنى الغَلَّةِ والفائِدَةِ الحاصِلَةِ مِن الشَّيْءِ.

اردو خراج دراصل زمین سے نکلنے والی شے کو کہتے ہیں۔ یہ خروج سے نکلا ہے جس کا معنی ہے آرپار ہو جانا، ظاہر ونمایاں ہونا۔ خراج کے یہ معانی بھی آتے ہیں: اناج اور کسی شے سے حاصل ہونے والا فائدہ۔
Indonesia Al-Kharāj artinya sesuatu yang keluar dari bumi. Asal katanya dari al-khurūj yang berarti menembus, tampak, dan menonjol. Al-Kharāj secara umum diungkapkan dengan arti hasil dan keuntungan dari sesuatu.

يَرِد مُصْطلَح (خَراج) في الفقهِ في مَواطِنَ، منها: كِتاب الزَّكاةِ، باب: إِخْراج الزَّكاةِ، وفي كتاب الجِهادِ، باب: قِسْمَة الغَنائِمِ، وفي كتاب إِحْياء المَواتِ، باب: شُروط إِحْياءِ الأَرْضِ. ويُطْلَقُ في كِتاب البَيْعِ، باب: الخِيار في البَيْعِ، وباب: الإِجارَة، وباب: الشَّرِكَة، ويُراد به: الفائِدَةُ الحاصِلَةُ مِن الشَّيْءِ. ويُطْلَقُ بِهذا المعنى أيضاً في عِلْمِ القَواعِدَ الفِقْهِيَةِ عند الكَلامِ على قاعِدَةِ:" الخَراجُ بِالضَّمانِ ".

الخَراجُ: الشَّيْءُ الخارِجُ مِن الأَرْضِ. وأَصْلُه مِن الخُروجِ، وهو: النَّفاذُ والظُّهورُ والبُروزُ، يُقال: خَرَجَ، يَخْرُجُ، خُرُوجاً، أيْ: نَفَذَ وبَرَزَ وظَهَرَ، ومنه سُمِّيَ ما يَأْخُذُهُ السُّلْطانُ مِن أَرْضِ الكُّفَّارِ خَراجاً؛ لأنّه حَقٌّ مُتَعَلِّقٌ بِالخارِجِ مِن الأَرْضِ مِن ثِمارٍ ونَحْوِها. ويُطْلَقُ بِمعنى الغَلَّةِ والفائِدَةِ الحاصِلَةِ مِن الشَّيْءِ، كَغَلَّةِ الدّارِ والأَرْضِ والدّابَةِ. ومِن مَعانِيه أيضاً: الأُجْرَةُ والكِراءُ، والضَّرِيبَةُ التي تُؤْخَذُ مِن أَمْوالِ النَّاس. وجَمْعُه: أَخْراجٌ وأَخارِيج.

خرج

تهذيب اللغة : (7/26) - المحكم والمحيط الأعظم : (5/4) - مختار الصحاح : (ص 89) - لسان العرب : (2/249) - تاج العروس : (5/509) - الأحكام السلطانية للماوردي : (ص 146) - الأحكام السلطانية لأبي يعلى : (ص 162) - مفاتيح العلوم : (ص 85) - التعريفات الفقهية : (ص 86) - معجم الـمصطلحات الـمالية والاقتصادية في لغة الفقهاء : (ص 193) - معجم لغة الفقهاء : (ص 194) - الموسوعة الفقهية الكويتية : (15/152) - المطلع على ألفاظ المقنع : (ص 283) - القاموس الفقهي : (ص 114) - معجم لغة الفقهاء : (ص 194) - الفتاوى الهندية : (2/237) - حاشية ابن عابدين : (4/186) - الأحكام السلطانية للماوردي : (ص 176) - الأحكام السلطانية لأبي يعلى : (ص 185) - الـمغني لابن قدامة : (2/716) - الموسوعة الفقهية الكويتية : (19/59) -