إسدال

English Letting the garment hang down
اردو کپڑے کو اپنے سر یا شانوں پر ڈال لینا
Indonesia Menjuntaikan pakaian

أَنْ يَجْعَل ثَوْبَهُ عَلَى رَأْسِهِ أَوْ كَتِفِهِ وَيُرْسِل أَطْرَافَهُ مِنْ جَانِبَيْهِ، دُونَ رَفْعِ أَحَدِهِمَا وَتَحْتَهُ مَا يَسْتُرُ عَوْرَتَهُ.

English Wearing the garment over one's head or shoulders and letting its edges hang down on both sides, without lifting any of them, while wearing what covers one's "‘awrah" (what should be covered of the body).
اردو کپڑے کو اپنے سر یا شانے پر ڈال کر اس کے کناروں کو اپنی دونوں جانب لٹکا دینا بایں طور کہ وہ ان میں سے کسی کو نہ اٹھائے اور اس کے نیچے ایسی شے ہو جو اس کے ستر کو چھپا رہی ہو۔
Indonesia Tindakan seseorang meletakkan pakaiannya di atas kepala atau pundaknya dan membiarkan ujungnya jatuh di kedua sisinya tanpa mengangkat salah satunya, sedangkan di bawahnya terdapat kain yang menutup auratnya.

الإِسْدَالُ هَيْئَةٌ فِي اللِّبَاسِ تَكونُ بِإِرْسَالِ الثَّوْبِ عَلَى الكَتِفَيْنِ أَوْ عَلَى الرَّأْسِ مِنْ غَيْرِ لُبْسِ ، وَذَلِكَ بِأَنْ يَجَعْلَ طَرَفَيْهِ عَنْ يَـمِينِهِ وَشِـمَالِهِ ، مِنْ غَيْـِر أَنْ يَضُمَّ الطَّرَفَيْنِ بَيْـنَ يَدَيْهِ ، وَلاَ يَرُدُّ أَحَدَ طَرَفَيْهِ عَلَى الْكَتِفِ الأُخْرَى ، فَإِنْ ضَمَّهُمَا فَلَيْسَ بإِسْدالٍ.

English "Isdāl" (letting the garment hang down) is a way of dressing in which one lets his garment hang over the shoulders or the head without wearing it, by letting both edges of the garment hang on the right and left sides without holding them together or sliding one edge over its opposite shoulder; otherwise, it is not called "isdāl".
اردو ’اسدال‘ لباس کی ایک خاص ہیئت کا نام ہے جس میں کپڑے کو دونوں شانوں یا سر پر پہنے بغیر لٹکا لیا جاتا ہے بایں طور کہ وہ شخص کپڑے کی دونوں اطراف کو اپنے دائیں اور بائیں جانب کر لے اور ایسا کرتے ہوئے نہ تو وہ اس کے دونوں کناروں کو اپنے سامنے ملائے اور نہ ہی ایک کنارے کو دوسرے شانے پر رکھے۔ اگر اس نے دونوں کو ملا دیا تو اسے اِسدال نہیں کہا جائے گا۔
Indonesia Al-Isdāl adalah model berpakaian dengan membiarkan pakaian tersampir di atas kedua pundak atau kepala tanpa dikenakan. Hal itu dengan menjadikan kedua sisinya di sebelah kanan dan kiri tanpa menyatukan kedua sisi tersebut dengan kedua tangannya, dan keduanya tidak saling tarik-menarik. Namun jika keduanya disatukan, maka tidak dikatakan "isdāl".

الإِرْخَاءُ وَالإِرْسَالُ ، وَأَصْلُ الإِسْدَالِ مِنَ السَّدْلِ وَهُوَ: نُزُولُ الشَّيْءِ مِنْ عُلْوٍ إِلَى سُفْلٍ سَاتِرًا لَهُ ، وَيُطْلَقُ الإِسْدَالُ عَلَى إِرْسَالِ الثَّوْبِ وَإِرْخَائِهِ عَلَى المَنْكِبَيْنِ ، وَقِيلَ: أَنْ يُلْقِيهِ عَلَى رَأْسِهِ وَيُرْسِلُهُ عَلَى مَنْكِبَيْهِ.

English "Isdāl": letting hang down. It is derived from "sadl", which means letting something hang down from above and act as a cover. Other meanings: letting the garment hang over the shoulders; and it was said: wearing a garment over one's head and letting it hang over one's shoulders.
اردو لٹکانا اور چھوڑ دینا۔ 'اِسدال' کا لفظ دراصل 'سَدْل' سے ماخوذ ہے جس کا معنی ہے کسی شے کا اوپر سے نیچے اس شے کو پردہ کرتے ہوئے آنا۔ 'اِسدال' کا اطلاق کپڑے کو شانوں پر چھوڑنے اورلٹکانے پر بھی ہوتا ہے۔ ایک قول کی رو سے اس کا مفہوم یہ ہے کہ کوئی شخص کپڑے کو سر پر ڈال کر شانوں پر لٹکا دے۔
Indonesia Menjuntaikan dan melepaskan. Asal kata al-isdāl dari as-sadlu, yaitu turunnya sesuatu dari atas ke bawah dengan menutupinya. Al-Isdāl digunakan untuk baju yang dijulurkan dan dilepaskan ke atas kedua pundak. Dikatakan pula, maknanya adalah meletakkan pakaian di atas kepala dan membiarkannya terjurai di atas kedua pundak.

يَذْكُرُ الفُقَهَاءُ مُصْطَلَحَ (الإِسْدَالِ) فِي كِتَابِ الصَّلاَةِ عِنْدَ الْكَلاَمِ عَنْ مَكْرُوهَاتِهَا ، وَأَيْضًا فِي بَابِ سَتْرِ الْعَوْرَةِ. وَيَذْكُرونَ الإِسْدَالَ أَيْضًا بِمَعْنَى: (إِرْسَالَ الخِمَارِ عَلَى وَجْهِ الْمَرْأَةِ) فِي كِتَابِ الحَجِّ عِنْدَ الْكَلاَمِ عَنْ مَحْظُورَاتِ الإِحْرَامِ.

الإِرْخَاءُ وَالإِرْسَالُ ، يُقَالُ: أَسْدَلَ الثَّوْبَ إِسْدَالاً إِذَا أَرْخَاهُ وَأَرْسَلَهُ ، وَأَصْلُ الإِسْدَالِ مِنَ السَّدْلِ وَهُوَ: نُزُولُ الشَّيْءِ مِنْ عُلْوٍ إِلَى سُفْلٍ سَاتِرًا لَهُ ، يُقَالُ: سَدَلَ الشَّيْءُ يَسْدِلُ سَدْلاً أَيْ نَزَلَ مِنْ عُلُوٍّ إِلَى سُفْلٍ ، وَشَعْرٌ مُنْسَدِلٌ عَلَى الظَّهْرِ أَيْ مُرْخَى ، وَيُطْلَقُ الإِسْدَالُ عَلَى إِرْسَالِ الثَّوْبِ وَإِرْخَائِهِ عَلَى المَنْكِبَيْنِ ، وَقِيلَ: أَنْ يُلْقِيهِ عَلَى رَأْسِهِ وَيُرْسِلُهُ عَلَى مَنْكِبَيْهِ.

سدل

معجم مقاييس اللغة : 149/3 - لسان العرب : 218/6 - تاج العروس : 194/29 - نيل الأوطار شرح منتقى الأخبار : 332/2 - تحفة الأحوذي بشرح جامع الترمذي : 317-316/2 - الـمغني لابن قدامة : 297/2 - معجم المصطلحات والألفاظ الفقهية : 171/1 - لسان العرب : 6 /218 -