أَوْقاتُ الكَراهَةِ

English Disliked prayer times
اردو مکروہ اوقات
Indonesia Waktu-waktu makruh

الأَزْمِنَةُ التي كَرِهَ الشّارِعُ الصَّلاةَ فِيها.

English The times of day at which performing prayer is disliked according to Shariah.
اردو وہ اوقات جن میں نماز ادا کرنے کو اللہ تعالی نے ناپسند فرمایا ہے۔
Indonesia Waktu-waktu yang mana Allah tidak menyukai adanya salat di waktu tersebut.

تَنْقَسِمُ أَوْقاتُ الْكَراهَةِ إلى قِسْمَينِ: أوَّلاً: أَوْقاتُ الكراهَةِ لأَمْرٍ في الوَقْتِ نَفسِهِ، وذلك الأمر هو عدمُ مشابهةِ الكفارِ في السُّجودِ للشَّمسِ، وهي ثَلاثَةُ أوقاتٍ: عند طُلوعِ الشَّمسِ إلى أن تَرْتَفِعَ بِـمِقدارِ رُمْحٍ أو رُمْحَيْنِ، وعند اسْتِوائِها في وَسَطِ السَّماءِ حتى تَزُولَ، وعند اصْفِرارِها إلى أن تَغْرُبَ. ثانِياً: أوْقاتُ الكَراهَةِ لأَمْرٍ في غَيْرِ الوَقْتِ، وهي تِسْعَةٌ على وَجْهِ التَّفصيل: قَبْلَ صَلاةِ الصُّبْحِ، وبعد صَلاةِ الصُّبْحِ، وبعد صَلاةِ العَصْرِ، وعند خُروجِ الخَطِيبِ حتّى يفرغ مِن صَلاتِهِ، وعند الإقامَةِ، وقَبْلَ صَلاةِ العِيدِ وبعدها، وبين الصَّلاتين المَجموعَتَيْنِ في كُلٍّ مِن عَرَفَةَ ومُزْدَلِفَةَ، وعند ضِيقِ وَقْتِ المكتُوبَةِ.

English "Awqāt al-karāhah" (disliked prayer times) are of two categories: 1. Times that are disliked because of a concomitant cause; in order to avoid similarity with the disbelievers in prostrating to the sun. They are three: when the sun is rising until it rises the length of a spear or two spears, when the sun reaches its zenith in the middle of the sky (i.e. when it is over head at noon) until it declines from its zenith, when the sun turns yellow before sunset until it sets. 2. Times that are disliked because of a non-concomitant cause. They are nine: before the Fajr prayer, after the Fajr prayer, after the ‘Asr prayer, when the imam comes out to deliver the "khutbah" (Friday Sermon) until he finishes his prayer, when the "iqāmah" (second call to prayer) is called out, before the Eid prayer and after it, between the two combined prayers in Arafat and Muzdalifah, and when there is not sufficient time left to perform the obligatory prayer.
اردو مکروہ اوقات کی دو قسمیں ہیں۔ پہلی قسم: وہ مکروہ اوقات جن میں کراہت خود اس وقت میں پائی جانے والی کسی شے کی وجہ سے آتی ہے۔ اور یہ سورج کو سجدہ کرنے میں کفار سے مشابہت نہ ہوجانے کے سبب ہے۔ ان کی تعداد تین ہے: (1) طلوع شمس کے وقت یہاں تک کہ یہ ایک یا دو نیزہ مقدار کے برابر اونچا ہوجائے۔ (2) جب سورج وسط آسمان میں آکر ٹھہر جائے یہاں تک کہ ڈھل جائے۔ (3) اس کے زرد ہونے سے لے کر غروب ہونے تک۔ دوسری قسم: وہ اوقات جن میں کراہت وقت کے بجائے کسی دوسری شے کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے۔ یہ بالتفصیل کل نو ہیں: نماز فجر سے پہلے کا وقت، نماز فجر کے بعد کا وقت، عصر کے بعد کا وقت، جب خطیب (جمعہ) کے لیے نکل آئے یہاں تک کہ وہ اپنی نمازسے فارغ ہوجائے، اقامت کے وقت، نماز عید سے پہلے اور بعد کا وقت، عرفہ اور مزدلفہ میں اکٹھی پڑھی جانے والی دو نمازوں کے درمیان کا وقت، اور جب فرض نماز کا وقت تنگ ہو۔
Indonesia Waktu-waktu yang tidak disukai terbagi menjadi dua: Pertama: waktu-waktu yang tidak disukai karena ada sesuatu di waktu tersebut, yaitu supaya tidak menyerupai orang-orang kafir ketika mereka sujud ke matahari. Dan jumlahnya tiga: ketika terbit matahari sampai meninggi seukuran satu atau dua tombak, ketika matahari berada di tengah-tengah langit hingga tergelincir, dan ketika langit berwarna kekuning-kuningan sampai terbenam. Kedua, waktu-waktu yang tidak disukai karena ada sesuatu yang tidak berhubungan langsung dengan waktu tersebut, dan jumlahnya sembilan; sebelum salat subuh, sesudah salat subuh, sesudah salat asar, saat khatib jumat naik mimbar hingga salatnyha selesai, saat ikamah, sebelum salat eid dan sesudahnya, waktu antara dua salat yang dijamak ketika di Arafah ataupun di Muzdalifah dan di ujung waktu salat wajib (hampir habis waktunya).

يَرِد مُصْطلَح (أَوْقات الكَراهَةِ) في الفقه في كتاب الحَجِّ، باب: صِفَة الحَجِّ والعُمْرَةِ، عند الكَلامِ عن الطَّوافِ حَوْلَ الكَعْبَةِ.

حاشية ابن عابدين : (1/371) - نهاية المحتاج إلى شرح المنهاج : (1/384) - كشاف القناع عن متن الإقناع : (1/450) - الموسوعة الفقهية الكويتية : (7/180) - الموسوعة الفقهية الكويتية : (7/182) -