صابِئَةٌ

English The Sabians
Français Sabéen
Español Sabeísmo.
اردو صابئہ
Indonesia Ṣābi`ah
Bosanski Sabejci
Русский Сабеи.

قَوْمٌ مِن الكُفّارِ يَعْبُدُون المَلائِكَةَ والكَواكِبَ، وقيل: إنَّهم طائِفةٌ مِن أهلِ الكِتاب.

English A sect of disbelievers who worship the angels and planets/stars. It is also said that they are from the People of the Book.
Français Mécréants qui adorent les Anges et les astres.
Español Secta que veneran a los ángeles y los planetas (2).
اردو کفار کی ایک قوم جو فرشتوں اور ستاروں کی پرستش کرتے ہیں۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ صابئہ اہلِ کتاب کا ایک گروہ ہے۔
Indonesia Segolongan orang kafir yang menyembah malaikat dan bintang. Ada yang berpendapat bahwa mereka adalah segolongan Ahli Kitab.
Bosanski Skupina nevjernika koji obožavaju meleke i zvijezde. Kaže se da je to grupacija Sljedbenika Knjige.
Русский Сабеи — это неверующий народ, который поклонялся ангелам и звездам.

اختلَف أهل العِلم في تعريف الصّابِئَة وبيانِ حقِيقتَهم على أقوالٍ، منها: 1- أنَّهُم قَوْمٌ كانوا على دِينِ نُوحٍ عليه السَّلامُ. 2- أنَّهُم صِنْفٌ مِن النَّصارَى أَلْيَنُ مِنْهُم قَوْلًا. 3- أنَّهم قَوْمٌ تَرَكَّبَ دِينُهُم بين اليَهُودِيَّةِ والمَجُوسِيَّة. 4- أنَّهُم بين اليَهُودِ والنَّصارَى. 5- أنَّهُم قَوْمٌ يَعْبُدُون المَلائِكَةَ، ويُصَلُّونَ إلى القِبْلَةِ، ويَقْرَؤون الزَّبُورَ، ويُصَلُّونَ الخَمْسَ. 6- وقيل: إنّهُم قَوْمٌ كانُوا يَقُولُونَ: لا إله إلّا الله، وليس لَهُم عَمَلٌ، ولا كِتابٌ، ولا نَبِيٌّ. 7- أنّ الصَّابِئَةَ فِرْقَتانِ مُتَمَيِّزَتانِ لا تَدْخُل إِحْداهُما في الأُخْرَى وإن تَوافَقَتا في الاِسْمِ، وهما: أ- الصَّابِئَةُ الحَرَّانِيُّونَ، وهم: قَوْمٌ أَقْدَمُ مِن النَّصارَى كانُوا في زَمَنِ إِبْراهِيمَ عليه السَّلامُ يَعْبُدُونَ الكَواكِبَ السَّبْعَةَ، ويُضِيفُونَ التَّأْثِيرَ إليها، ويَزْعُمُونَ أنّ الفلَكَ حَيٌّ ناطِقٌ. ب- طائِفَةٌ مِن أَهْل الكِتابِ لهم شَبَهٌ بِالنَّصارَى؛ لأنَّهم مُخالِفُونَ لهم في كثيرٍ مِن دِيانَتِهِم، والنَّصارَى تُسَمِّيهِم:يُوحانِسِيَّةَ. وأَضافَ ابْن تَيْمِيَّةَ فِرْقَةً ثالِثَةً كانت قَبْل التَّوْراةِ والإِنْجِيل، كانوا مُوَحِّدِينَ؛ قال: فهؤُلاءِ هم الذين أَثْنَى اللَّهُ تعالى عليهِم بِقَوْلِهِ تَعالى: "إِنَّ الَّذِينَ آمَنُوا وَالَّذِينَ هَادُوا وَالنَّصَارَى وَالصَّابِئِينَ مَنْ آمَنَ بِاللَّهِ وَالْيَوْمِ الآْخِرِ وَعَمِل صَالِحًا فَلَهُمْ أَجْرُهُمْ عِنْدَ رَبِّهِمْ وَلاَ خَوْفٌ عَلَيْهِمْ وَلاَ هُمْ يَحْزَنُونَ" (البقرة : 62).

English "As-Sābi’ah" (the Sabians): The scholars held different opinions regarding the true identity of the "Sābi’ah": 1. They were people who embraced the religion of Nūh (Noah), peace be upon him. 2. They are one type of Christians. 3. They are people whose religion combined Judaism and Zoroastrianism. 4. They are between the Jews and the Christians. 5. They are people who worship the angels, pray while facing the "qiblah" (direction of the Ka‘bah), recite the Psalms, and perform the five prayers. 6. They are people who used to say: "There is no deity worthy of worship except Allah", but they had no deeds, no book, and no prophet. 7. The Sabians are two distinct sects that share only the name: A. The Harranian Sabians: They existed before the Christians, during the time of Ibrāhim (Abraham), peace be upon him. They used to worship the seven planets, believe in their influence, and claim that the orbit is a speaking living being.B. A group of the People of the Book who resemble the Christians but differ with them in many aspects of their religion. The Christians call them "Yoohānisiyyah". Ibn Taymiyyah added a third group of people who lived before the Torah and the Bible and were monotheists. Those were the people whom Allah, the Almighty, praised in the verse wherein He said: {Indeed, those who believed and those who were Jews or Christians or Sabeans [before Prophet Muhammad] - those [among them] who believed in Allah and the Last Day and did righteousness - will have their reward with their Lord, and no fear will there be concerning them, nor will they grieve.} [Al-Baqarah: 62]
Français Les Sabéens sont un groupe mécréant qui se divise en deux catégories : 1- Un groupe qui s’accorde avec les Chrétiens et les Juifs et qui les suivent. On les trouve à Ḥarrân dans les régions les plus éloignées du Shâm. 2- Un groupe qui adore les astres. On les trouve dans les régions frontalières de l’Irak.
Español Al-sabaiya (sabeísmo): Es una secta y se divide en dos tipos: 1. Un grupo que está de acuerdo con los cristianos y judíos, y los siguen; se encuentran en Hirran al norte de Siria. 2. Otro grupo que adora los astros y se encuentra en Irak.
اردو صابئہ کی تعریف اور ان کی حقیقت کے بارے میں اہلِ علم کے مختلف اقوال ہیں، جن میں سے کچھ حسبِ ذیل ہیں: 1- یہ ایسی قوم ہے جو نوح علیہ السلام کے دین پر تھے۔ 2- یہ نصرانیوں کی ایک قسم ہے جو باتچیت میں نصاری سے نرم ترین لوگ تھے۔ 3- یہ ایسی قوم ہے جس کا دین یہودیت اور مجوسیت کی آمیزش سے مرکب ہے۔ 4- یہ یہود ونصاری کے مابین ایک گروہ ہے۔ 5- یہ ایسی قوم ہے جو فرشتوں کی پرستش کرتے ہیں، قبلہ رو ہو کر نمازیں پڑھتے ہیں، زبور کی تلاوت کرتے ہیں اور نماز پنج گانہ ادا کرتے ہیں۔ 6-ایک قول یہ بھی ہے کہ یہ ایسی قوم کے افراد ہیں جو ”لا الہ الا اللہ“ کہتے تو ہیں تاہم عمل میں کورے ہیں، کسی آسمانی کتاب کو مانتے ہیں نہ ہی کسی نبی پر ان کا ایمان ہے۔ 7- صابئہ کے دو نمایاں فرقے ہیں، مگر نام میں یکسانیت کے باوجود وہ ایک دوسرے میں داخل نہیں ہیں۔ اور وہ دونوں فرقے یہ ہیں: أ: حرّانی صابئہ: یہ نصاری سے بھی قدیم ترین قوم ہیں، جو ابراہیم علیہ الصلاۃ والسلام کے زمانے میں پائے جاتے تھے، سات ستاروں کی پرستش کرتے، ان میں تاثیر کا عقیدہ رکھتے اور ان کا یہ خیال ہے کہ فلک میں جان ہوتی ہے اور ان میں قوت گویائی پائی جاتی ہے۔ ب: اہلِ کتاب کا ایک گروہ ہے نصاری اور ان کے مابین مشابہت ہے، اس لیے کہ یہ دین کے کئی امور میں ان کے مخالف ہیں اور نصاری انہیں ’یوحانسیہ‘ کے نام سے موسوم کرتے ہیں۔ علامہ ابن تیمیہ رحمہ اللہ نے ایک تیسرے فرقہ کا اضافہ کیا ہے، جو توراۃ اور انجیل سے پہلے تھا اور وہ لوگ توحید پرست تھے۔ یہ وہی لوگ ہیں جن کی اللہ تعالی نے اپنے اس قول کے ذریعہ ستائش کی ہے: ”إِنَّ الَّذِينَ آمَنُوا وَالَّذِينَ هَادُوا وَالنَّصَارَى وَالصَّابِئِينَ مَنْ آمَنَ بِاللَّهِ وَالْيَوْمِ الآْخِرِ وَعَمِل صَالِحًا فَلَهُمْ أَجْرُهُمْ عِنْدَ رَبِّهِمْ وَلاَ خَوْفٌ عَلَيْهِمْ وَلاَ هُمْ يَحْزَنُونَ“. ترجمہ: مسلمان ہوں، یہودی ہوں، نصاریٰ ہوں یا صابی ہوں، جو کوئی بھی اللہ تعالیٰ پر اور قیامت کے دن پر ایمان ﻻئے اور نیک عمل کرے ان کے اجر ان کے رب کے پاس ہیں اور ان پر نہ تو کوئی خوف ہے اور نہ اداسی۔ (سورۃ البقرة : 62)
Indonesia Para ulama berbeda pendapat dalam mendefinisikan dan menjelaskan hakikat kelompok Ṣābi`ah ke dalam beberapa pendapat, di antaranya: 1. Mereka adalah sekelompok orang yang dahulunya menganut agama Nuh ‘alaihissalām. 2. Mereka adalah segolongan orang Nasrani yang lebih lembut ucapannya. 3. Mereka adalah satu kaum yang menggabungkan ajaran agama Yahudi dan Majusi. 4. Mereka antara Yahudi dan Nasrani. 5. Mereka adalah sekelompok orang yang menyembah malaikat, salat menghadap kiblat, membaca kitab Zabur, dan melaksanakan salat lima waktu. 6. Ada yang berpendapat bahwa mereka adalah sekelompok orang yang mengikrarkan lā ilāha illallāh (tidak ada tuhan yang berhak disembah selain Allah) tetapi tidak memiliki amalan, kitab dan nabi. 7. Bahwa Ṣabi`ah memiliki dua kelompok berbeda, yang tidak saling masuki meskipun namanya sama, yaitu: a) Ṣabi`ah Harran. Mereka lebih dulu dari Nasrani, yaitu hidup pada masa Ibrahim ‘alaihissalām. Mereka menyembah bintang yang tujuh dan meyakininya memberikan pengaruh serta mengklaim bahwa falak (cakrawala) adalah makhluk hidup yang berbicara. b) Sekelompok Ahli Kitab yang memiliki kemiripan dengan Nasrani dan menyelisihi mereka dalam banyak cara beragama. Orang-orang Nasrani menamakan mereka pengikut Yohanes. Ibnu Taimiyah menambahkan kelompok ketiga yang ada sebelum Taurat dan Injil. Mereka adalah orang-orang bertauhid. Ibnu Taimiyah berkata, "Merekalah orang-orang yang dipuji oleh Allah Ta’ālā dalam firman-Nya, "Sesungguhnya orang-orang yang beriman, orang-orang Yahudi, orang-orang Nasrani, dan orang-orang Ṣabi`ah, siapa saja (di antara mereka) yang beriman kepada Allah dan hari akhir, dan melakukan kebajikan, mereka mendapat pahala dari Rabb mereka, tidak ada rasa takut pada mereka, dan mereka tidak bersedih hati." (Al-Baqarah: 62)
Bosanski Islamski učenjaci razilaze se u definiciji Sabejaca i definisanju njihove suštine na nekoliko mišljenja, od kojih su: 1. Oni su bili na vjeri Nuha, alejhi selam. 2. Oni su vrsta kršćana koja ima bolje vjerovanje od njih. 3. Oni su narod čija je vjera spoj židovske i vatropokloničke vjere. 4. Oni su između Jevreja i kršćana. 5. Oni obožavaju meleke, klanjaju prema kibli, čitaju Zebur i klanjaju pet molitvi. 6. Kaže se da su oni narod koji su svjedočili la ilahe illellah, ali nisu imali djela, ni knjige, ni vjerovjesnika. 7. Oni su dvije skupine posebno odvojene, od kojih ni jedna ne ulazi u drugu, iako imaju isti naziv: a) sabejci harranijjuni: a to je narod stariji od kršćana, bili su u vrijeme Ibrahima, alejhisselam, obožavali su sedam nebeskih tijela, za koje su smatrali da imaju uticaj na pojave, i smatrali su da je kosmos živ i da govori. b) Grupacija Sljebenika Knjige koji su ličili kršćanima, ali se s njima nisu slagali u mnogim pitanjima vjere. Kršćani ih nazivaju Juhanisijje. Ibn Tejmijje dodaje još jednu skupinu koja je bila prije objave Tevrata i Indžila, a bili su monoteisti. To su oni koje je Allah pohvalio kada je kazao: "One koji vjeruju, te one koji su bili židovi, kršćani i sabijci, a koji su vjerovali u Allaha i Posljednji dan i dobra djela činili - doista čeka nagrada od Gospodara njihova; za njih nema straha i oni neće tugovati." (El-bekare, 62.).
Русский Сабеи — это неверующий народ, который разделился на 2 части: 1) одни приняли учения христиан и иудеев и последовали за ними; 2) другие поклонялись звездам. В основном они были сосредоточены на окраинах Ирака.

الصّابِئَةُ: جَمْعُ صابِئٍ، وهو مَن خَرَجَ مِن دِينٍ إلى دِينٍ آخَرَ. وأصل الكلِمَة يدلُّ على خُروجٍ وبُروزٍ، يُقال: صَبَأَ فُلانٌ، يَصْبَأُ: إذا خَرج مِن دِينِهِ، ثمّ جُعِلَ هذا اللَّقَبُ عَلَماً على طائِفَةٍ مِن الكُفّارِ.

English "Sābi’ah" (sing. sābi): someone who left one religion for another religion. Original meaning: emersion, projection. It then became the name and title for a certain sect of disbelievers.
Français « As-Ṣâbi`ah » : pluriel du mot : « Ṣâbi` » : personne qui délaisse sa religion au profit d'une autre. On dit : untel a quitté sa religion, "il l'a quittée" Plus tard, ce terme fut employé pour désigner un groupe de mécréants précis.
Español Al-sabaiya (en árabe) es plural de sabi (la persona que sale de una religión para entrar en otra). Este nombre hace referencia a una secta específica de los incrédulos.
اردو صابئہ: صابئ کی جمع ہے، اور اس سے مراد وہ شخص ہے جو ایک دین کو چھوڑ کر دوسرے دین کو اختیار کر لیتا ہے۔ اس کے اصل معنی خارج ہونے اور نمایاں ہونے کے ہیں، اسی سے جب کوئی شخص دین سے نکل جائے تو کہا جاتا ہے: ”صَبَأَ فُلانٌ، يَصْبَأُ“ کہ وہ بے دین ہوگیا۔ بعد میں یہ لقب کفار کے ایک مخصوص گروہ کے ساتھ خاص ہوگیا۔
Indonesia Ṣābi`ah bentuk jamak dari ṣābi`, yaitu orang yang berpindah dari satu agama kepada agama lainnya. Asal arti kata tersebut menunjukkan makna keluar dan muncul. Dikatakan, "Ṣaba`a fulān yaṣba`u" apabila dia keluar dari agamanya. Selanjutnya gelar ini dijadikan sebagai nama untuk satu kelompok orang kafir.
Bosanski "Es-Sabieh" množina je riječi "sabi", a to je onaj ko je promijenio vjeru. Osnova riječi ukazuje na izlazak. Kaže se: sabe'e fulanun jasbe'u, što znači: napustio je vjeru. Ovaj se izraz kasnije počeo koristiti za određenu skupinu nevjernika.
Русский "Сабиа" — это мн. число от слова "саби", которое буквально означает "вероотступник". Арабы говорили про человека, который оставил свою религию, так: "Саба фулянун, ясбау". Впоследствии это слово стало именем нарицательным в отношении конкретного народа из числа неверующих.

يَرِد مُصْطلَح (صابِئَة) في الفِقْهِ في عِدَّة مَواطِن، منها: كتاب النِّكاحِ، باب: المُحَرَّمات في النِّكاحِ، وفي كِتابِ المَوارِيثِ، باب: مِيراث أَهْلِ المِلَلِ، وفي كتاب البيوع، باب: الوقف، وفي كِتاب الجِهاد، باب: عَقْد الذِّمَّةِ لأَهْلِ الكِتابِ، وفي كتاب الدِّيات، باب: أحكام الدِّيَّة. ويرِد أيضاً في عِلمِ العَقِيدَةِ، باب: تَوْحيد الأُلوهِيَّةِ عند الكَلام على الشِّرْكِ وأَقْسامِهِ، وفي باب: الفِرَق والأديان.

الصّابِئَةُ: جَمْعُ صابِئٍ، وهو في أصل اللُّغةِ مَن خَرَجَ مِن دِينٍ إلى دِينٍ آخَرَ. وأصل الكلِمَة يدلُّ على خُروجٍ وبُروزٍ، يُقال: صَبَأَتِ النُّجُومُ، أيْ: خَرَجَت مِن مَطالِعِها، وصَبَأَ فُلانٌ، يَصْبَأُ: إذا خَرج مِن دِينِهِ، ثمّ جُعِلَ هذا اللَّقَبُ عَلَماً على طائِفَةٍ مِن الكُفّارِ يُقال إنَّها تَعْبُدُ الكوَاكِبَ في الباطِنِ وتُنْسَبُ إلى النَّصْرانِيَّةِ في الظّاهِرِ، وهُم الصّابِئَةُ والصّابِئُونَ.

صبأ

العين : (7/171) - تهذيب اللغة : (12/180) - مقاييس اللغة : (3/332) - المحكم والمحيط الأعظم : (8/354) - القاموس المحيط : (ص 45) - لسان العرب : (1/108) - بدائع الصنائع في ترتيب الشرائع : (9/4330) - أحكام القرآن للجصاص : (2/464) - تفسير القرطبي : (1/434) - الـمغني لابن قدامة : (7/130) - تلبيس إبليس : (ص 74) - الموسوعة الفقهية الكويتية : (26/293) - معجم لغة الفقهاء : (ص 269) - معجم المصطلحات والألفاظ الفقهية : (2/351) -